خبر و نظر

خواتین کی ترقی و تعمیر  کے لئے خواتین کی تعلیم پر خصوصی زور دیا جانا چاہئے: مولانا مزمل الحق مدنی

محمد شاہ نواز ندوی

اے  ایم ایس انٹر نیشنل اسکول بیلوا میں سالانہ تقریب کا شاندار انعقاد

(کشن گنج) توحید ایجوكیشنل ٹرسٹ،کشن گنج کے زیر اہتمام بیلوا میں قائم  اے ایم ایس  انٹرنیشنل اسکول میں آج سالانہ تقریب کا انعقاد کیا گیا. اس موقع پر اسکول کے طلبہ و طالبات کی طرف سے ادبی اور ثقافتی پروگرام پیش کیے گئے۔بچوں نے تعلیم کی اہمیت بالخصوص لڑکیوں کی تعلیم کی اہمیت،حفظان صحت، ماحول کو آلودہ ہونے سے محفوظ رکھنا، صحت مند اور بہتر معاشرے کی تعمیرسے متعلقہ مختلف قسم کے ڈرامے پیش کیا۔یہی نہیں بلکہ ملک میں باہمی اتحاد و اتفاق،  اخوت و بھائی چارگی اور سرحدوں کی حفاظت میں تعینات جوانوں کی قربانیوں پر ڈراموں کے ساتھ ساتھ تقاریر بھی پیش کئے گئے. پروگرام قرآن کریم کی تلاوت کے ساتھ شروع ہوا. پھر قومی ترانہ ‘سارے جہاں سے اچھا، ہندوستاں ہمارا’ پیش کیا گیا. اس کے بعد توحید ایجوكیشنل ٹرسٹ کے چیرمین مولانا مطیع الرحمن نے تعلیم کی اہمیت پر روشنی ڈالی، ساتھ ہی انہوں نے سیمانچل بالخصوص کشن گنج کو تعلیمی پسماندگی سے دور کرنے کا عہد کیا۔ اس موقع پر بھی انہوں نے کشمیر کے پلوامہ میں شہید ہوئے دلیر جوانوں کو نم آنکھوں سے یاد کیا اور ان کے اہل خانہ کے لیے ٹرسٹ کی طرف سے اے ایم ایس انٹرنیشنل اسکول، جامعہ عائشہ الاسلامیہ، توحید انسٹی ٹیوٹ آف انجینئرنگ اینڈ ٹکنالوجی، توحید آئیڈیل اکیڈمی وغیرہ میں مفت تعلیم دینے کے بارے میں بات کہی۔

وہیں جامعہ عائشہ الاسلامیہ کے پرنسپل مولانا مزمل الحق مدنی نے کہا کہ تعلیم کے بغیر انسان کا کوئی وجود نہیں ہے۔ تعلیم انسان کی شناخت ہے اور وہ تعلیم کے ذریعہ کامیابی کی چوٹی تک پہنچتا ہے. لہذا آج ہم سب کو اس کا ارادہ کرنا چاہئے کہ بھلے ہی دو روٹی کم کھائیں گے لیکن اپنے بچے اور بچیوں کو اسکول ضرور بھیجیں گے۔ مزمل الحق نے لڑکیوں کی تعلیم پر خصوصی زور دینے کی بات کی. انہوں نے کہا کہ بچوں کی پہلا اسکول ماں کی گود ہے۔ اگر ماں ہی ناخواندہ ہوں گی تو بچوں  کو تعلیم کا دلدادہ کیسے بنایا جائے گا؟۔ اس لئے تعلیم یافتہ معاشرے اور قوم کے لئے لڑکیوں کا تعلیم حاصل کرنا وقت کی اشد ضرورت ہے۔

اےایم ایس انٹرنیشنل اسکول کی سالانہ تقریب پر ‘خسرہ اور ربیلا سے پاک ہندوستان مہم’ سے منسلک ڈاکٹر سی ایم مشرا نے بچوں کو روشن مستقبل کی خواہش کے ساتھ صحت مند زندگی کی تجاویز بھی دیے۔ ساتھ ہی انہوں نے اس پلیٹ فارم کے ذریعہ کشن گنج کی عوام سے اپیل کی کہ وہ اپنے بچوں کو ربیلا اور خسرہ جیسی جان لیوا بیماریوں سے محفوظ رکھنے کے لئے اس کے ویکسین ضرور لگوائیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ ربیلا اور خسرہ ویکسین کے لئے اےایم ایس انٹر نیشنل اسکول کے احاطہ میں آئندہ 6 مارچ کو کیمپ لگائے جائیں گے لہذا تمام 9 ماہ سے 15 سال کے بچوں کو لے کر ضرور آئیں.

اےایم ایس انٹرنیشنل اسکول کی سالانہ تقریب میں بی جے پی لیڈر عبدالرحمن، سابق اے ڈی ایم  رہبر اسلام، ماسٹر عبدالرشيد، مظہر مدنی، یوسف علی، ہارون عمری، شاہنواز ندوی،پرفیسر عبد العظیم ، نہال اختر پيامي، تاج علی وغیرہ خاص طور پر موجود تھے.

Comment here